kalam e muattar
Urdu,  ادب,  شاعری

آپکا انتظار کر دیکھا

آپکا انتظار کر دیکھا
سر پہ یہ بھی الزام دھر دیکھا
آپ وفا میں بے وفا ٹھہرے
یہی روش شام وسحر دیکھا
اک ہی قسمت ملی دیوانوں کو
سنگ اور وہ بھی ہے بہ سر دیکھا
اک روایت چلی میخانے سے
جسے ہر جا و ہر نگر دیکھا
پہلے وعدوں پہ اعتبار تھا دل
اب کے وعدوں کو بھی گزر دیکھا
پھر سے مجنوں کے پیر صحرا میں
تیری گلی میں نہ ادھر دیکھا

Leave a Reply