Blog Literature Urdu

ابھی تو خواب باقی ہیں

ابھی تو خواب باقی ہیں
ابھی تو لفظ تُشنا ہیں
ابھی تو درد کے قصے
ادھورے اَن کہے سے ہیں
ابھی تو جاگتے راتوں کے غم کچھ کم نہیں ہوئے
ابھی بھی مجھ سے باغی
میرے ہی الفاظ کہتے ہیں
میں پاگل ہوں۔۔
میں میخانے میں بہکی باتوں کا مجرم ہوں
انا و رقص کے قاتل
مجھے سنگسار کرتے ہیں
مجھے نیلام ہونا ہے
کوئی بازار دکھاؤ
جہاں پاگل بھی بکتے ہوں
عطا ہو یہ عنایت ہو

Leave a Reply

Ready to get started?

Are you ready
Get in touch or create an account.

Get Started