Literature,  Urdu

اشکِ یار

آنسوؤں کے دئیے

آنکھوں میں تیرے

اچھے لگتے ہیں دوست

تیری آنکھوں میں یہ

کتنے ججتے ہیں دوست

بہت سجتے ہیں دوست

 

یونہی برباد محبت کا فسانہ ہے عجیب

دلِ خاموش سے اک بار ذرا بات کرو

دل جو ٹوٹے تو بخدا واں خرابہ ہے دل

جا کہ اک بار تو محفل میں اس کی رات کرو

 

Senior writer, author, and researcher at AromaNish, specializing in Psychology with an impact on information technology. As a writer, he writes about business, literature, human psychology, and technology, in blogs and websites for clients and businesses. Enjoys reading, writing and traveling when he is not here with us...

Leave a Reply