kalam e muattar
Urdu,  شاعری

شورشِ دل: دُکھ تو ہوتا ہے۔۔۔

دُکھ تو ہوتا ہے جب کوئی اپنا

یوں چھوڑ جائے دُکھ تو ہوتا ہے

جب ہم دُنیا میں تنہا ہو جائیں

خیالِ یار میں جب کھو جائیں

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

ساتھ رہ رہ کے جب بچھڑ جائیں

موتیوں کی طرح بکھر جائیں

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

شام سے پہلے زندگانی کا

تم نے پوچھا نہیں کہانی کا

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

شبِ تنہائی میں رفیقِ حیات

مِل سکے نا کوئی رفیقِ نجات

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

اُلفتِ غم میں شام سے پہلے

زندگی جائے جام سے پہلے

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

پاس آکے بھی تم گزر جاو

غمِ حیات سے بِکھر جاو

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

سازشِ زندگی میں ہارے ہم

بس اب تو ہو گئے ہیں وارے ہم

!دُکھ تو ہوتا ہے نا۔۔ اے میری جان

Leave a Reply