Blog Literature Urdu

تم نے دیکھا ہے کبھی حُسن کو آزار کے بعد

تم نے دیکھا ہے کبھی حُسن کو آزار کے بعد

میرا آشیانہ کبھی بھی آہ! شبِ تار کے بعد

میکشی چھوڑ دونگا تیری حسیں زلفوں کی قسم

مجھے بے آگ جلاؤ آہ! لبِ یار کے بعد

حُسن عاشق بھی تو رکھتا ہے مگر تیرا حُسن

کچھ اور چیز ہے اے دل! میرے اظہار کے بعد

اَن کہی بات سمجھ آئے گی اک دن تو تجھے

آہ! ارمان رہے گا بس میرے دار کے بعد

پھر معطر ہے پھر وہی نغمے

جانے اب کیا کرے گا یار کے بعد

Leave a Reply

Ready to get started?

Are you ready
Get in touch or create an account.

Get Started