kalam e muattar
Urdu,  ادب,  شاعری

محفل کو چھوڑ دوں مجھے صحرا عزیز ہے

محفل کو چھوڑ دوں مجھے صحرا عزیز ہے

اِس دل میرے وحشی کو ویرانہ عزیز ہے

شمع بننا چاہا تو یہ دل نے کہا مجھے

مجھکو شمع بننے سے پروانہ عزیز ہے

محفل سے کیا مِلا مجھے، صحرائی ہوں میں تو

ہر دشتِ پر فضا کی ہر لیلٰی عزیز ہے

کیا مجھکو تیرے رسم سے پروانۂِ ظالم

بس مجھکو اک ساغر و مینا عزیز ہے

مجھ سے یہ معطر نے کہا بعدِ موت بھی

مجھکو نغمے کہنے سے چُپ رہنا عزیز ہے

مخزنِ درد

Leave a Reply