kalam e muattar
Urdu,  ادب,  شاعری

میں اب اُس دلنشیں کی بات کروں

میں اب اُس دلنشیں کی بات کروں

خواب اب جاگتے میں رات کروں

اُس کو مسند پہ بٹھایا دل نے

دل سے اب کس ادا کی بات کروں

یا اُس کے دہلیز پر بیٹھوں

یا اُسے خود ہی اپنی ذات کروں

ناتمام

نوائے راز

Leave a Reply