Blog Literature Urdu

محفل کو چھوڑ دوں مجھے صحرا عزیز ہے

محفل کو چھوڑ دوں مجھے صحرا عزیز ہے

اِس دل میرے وحشی کو ویرانہ عزیز ہے

شمع بننا چاہا تو یہ دل نے کہا مجھے

مجھکو شمع بننے سے پروانہ عزیز ہے

محفل سے کیا مِلا مجھے، صحرائی ہوں میں تو

ہر دشتِ پر فضا کی ہر لیلٰی عزیز ہے

کیا مجھکو تیرے رسم سے پروانۂِ ظالم

بس مجھکو اک ساغر و مینا عزیز ہے

مجھ سے یہ معطر نے کہا بعدِ موت بھی

مجھکو نغمے کہنے سے چُپ رہنا عزیز ہے

Leave a Reply

Ready to get started?

Are you ready
Get in touch or create an account.

Get Started