Blog Literature Urdu

میں اب اُس دلنشیں کی بات کروں؟

دلنشیں
میں اب اُس دلنشیں کی بات کروں؟
خواب اب جاگتے میں رات کروں؟
اُس کو مسند پہ بٹھایا دل نے
دل سے اب کس جفا کی بات کروں؟
یا تو اُس کی دہلیز پہ بیٹھوں
یا اُسے خُود ہی اپنی ذات کروں
کیا یہ قصہ نہیں ماضی کے ہجرتوں کا داغ
یا تجھے بت کہہ کے داخلِ سومنات کروں؟
تم نے کیا سمجھا، سمجھاؤ تو کبھی
اشک، آنکھوں سے کیا برسات کروں؟
تم سراپا خُمار بن جاؤ
میں تجھے عشق کی سوغات کروں
اُس نے جاتے ہوئے یہ کتنا کہا
اُسے روکو، میں اُس سے بات کروں
اناپرست ہے وہ یوں شکست نہ مانے گا
اُس کے کیا اور حکایات کروں؟
وہ معطر ہے وہ نہ مانے گا
اُس سے کیا دل کی کوئی بات کروں؟

Leave a Reply

Ready to get started?

Are you ready
Get in touch or create an account.

Get Started