Primerose
Literature

Nigar e Fun by Jon

Spread the love

نگارِ فن
(1965 کی جنگ کے بعد پہلا تاثر )

بہت لکھا ہے تری زلف پر شکن کےلیے
نگار فن! مرے نغمے ہیں اب وطن کے لیے
مرے رجز کی ضرورت ہے رزم گاہوں کو
وداع کر مری بانہوں، مری نگاہوں کو
وفا کا معرکہِ لالہ کار آ پہنچا
حریف، پیش دیار بہار آ پہنچا
حریم فن کو بچانے کا وقت ہے، یہ وقت
خود اپنے خوں میں نہانے کا وقت ہے، یہ وقت
پئے ستیز، جوانانِ سینہ خیز چلے
شباب، داد طلب تھا، سو تیز تیز چلے
نہیں ہیں تیرے وفادار غیر کے ساتھی
ہیں خیر و شر کی لڑائی میں خیر کے ساتھی
یہ معرکہ تو ہے خود اس حرم سرا کے لیے
ترے لیے، تری انگڑائی کی فضا کے لیے
نگارفن! یہ در و بام ارجمند رہیں
تری گلی کے طرح دار سر بلند رہیں
وداع کر مری بانہوں، مری نگاہوں کو
رکھے بہار سمن پوش، تیری راہوں کو

جون ایلیا

Leave a Reply

%d bloggers like this: