Literature,  Urdu

سکون

وہ جو زندگی میں سکون تھا

وہ سکون کوئی چُراگیا

وہ جو مہوشوں کا فسون تھا

وہ فسون کوئی مٹا گیا

کیا سے کیا بنی میری زندگی

وہ افیون کوئی پلا گیا

جس پہ استوار تھی ہر خوشی

وہ ستون کوئی ہلا گیا

تھی شراب و جام جب زندگی

وہ جنون کوئی بھلا گیا

Leave a Reply