Blog Literature Urdu

استفسارات: ہیں یہ تُھوڑے سے سوالات صنم

دل ہے میخانۂِ جزبات صنم

ہائے بتخانہ، خُرابات صنم

روز تجھ ہی سے آکے ملتا ہوں

کیوں ادھوری ہے ملاقات صنم

میرے نغموں سے نہ اُکتا جانا

دل میں ہے محشرِ نغمات صنم

میں نے جینے کی دعا مانگی نہیں

میرے پاس تھوڑے ہیں لمحات صنم

دُنیا کے آخری کونے میں ہوں

آگے ہے بحرِ ظُلمات صنم

صبح ہوتی ہے جاگ اُٹھتا ہوں

ہائے کتنی غمگیں ہے رات صنم

میں ہوں باغی اور اندازِ بغاوت لیے میں

توڑ جاؤنگا تیرے سب روایات صنم

تیری آنکھوں میں لگا ہے کاجل

پھر بھی اشکوں کا یہ برسات صنم

تم معطر کے دل کے تاجر ہو

پھر بھی اُس سے یہ شکایات، صنم

Leave a Reply

Ready to get started?

Are you ready
Get in touch or create an account.

Get Started