• kashmir freedom

    کشمیر کی آذادی کا واحد حل

    کشمیر کی تاریخِ مقاومت اتنی طویل نہیں کہ اس کے لیے تاریخ کے قبرستان سے گڑھے مردے نکالے جائیں۔ کشمیریوں یا دنیا بھر کے حُریت پسندوں کو جو توقعات تھیں دنیا بھر کی نام نہاد طاقتوں اور تنظیموں سے وہ ان جاری حالات کی وجہ سے ختم ہوچکے ہیں۔ توقعات جو تھیں پاکستانی اور ہندوستانی حکومتوں سے وہ بھی بغیر کسی عملی اقدامات کے زمیں بھوس ہو چکے ہیں۔ بین الاقوامی سیاست کے بدلتے ہوئے پھینترے مظلومانِ زمان کے لیے ہمیشہ سے شکنجے کسے ہوئے ہیں۔ کشمیریوں سے اپنوں کی خیانت اسے اس دن تک لے آئی ہیں۔ مسلحہ، غیر مسلحہ، سیاسی اور ثقافتی جنگ میں وقتی پسپائی کو اپنی غلامی کی تقدیر پر اکتفا نہ کریں کوششِ مسلسل ہی رنگ لاتی ہے۔ اس کا راہِ حل فقط جہاد ہے مگر یہ جہاد نام نہاد جہادی تنظیموں کے طرز کا جہاد نہیں بلکہ عوامی جہاد یعنی جدوجہد ہے۔ جو کہ زندگی کے ہر شعبے پر مشتمل ہو۔ اب تک بغاوتیں…

  • The basic settings of facebook

    The basic Facebook settings you must know

    These basic settings of privacy can be selected for your safety and peace of mind. It will also save you a lot of time and psychological labor if you are continuously working on your profile to untag yourself from dozens of pictures of friends or mutual friends than this post is for you.

  • بہت دل کو کشادہ کر لیا کیا

    زمانے بھر سے وعدہ کر لیا کیا تو کیا سچ مچ جدائی مجھ سے کر لی تو کیا خود کو بھی آدھا کر لیا کیا ہُنر مندی سے اپنی دل کا صفحہ مری جاں تم نے سادہ کر لیا کیا

  • حُسن بیزار جس کلی میں ہے

    حُسن بیزار جس گلی میں ہے عشق پائمال اُس گلی میں ہے اُس سے گلہ ہو کس وجہ سے شیخ تو کیوں بدحال اُس گلی میں ہے زاہدوں کو وہ سب مبارک ہو اپنی تو شام اُس گلی میں ہے

  • اچھا ہوا کہ حُسن سے بیزار ہوگئے

    اچھا ہوا کہ حُسن سے بیزار ہوگئے ایک ضبط ہے جو کرکے بہت خوار ہوگئے اچھا ہوا کہ تم سے ملاقات ہو گئی اچھا ہوا کہ زہر تیرا جان گئے ہم اچھا ہوا کہ خواب سے آگے نہ کچھ ہوا اچھا ہوا کہ ضبط خود ہی ٹوٹ سا گیا

  • ظلم اور دہشت کے خلاف جنگ ابھی جاری ہے

    از ازل تا ابد جنگ جاری ہے ہاں جنگ جاری ہے۔۔۔ حق و باطل کی جنگ بغیر کسی وقفے کے جاری ہے۔۔۔ معرکہِ وجود میں صحیح وغلط کی جنگ جاری ہے۔۔۔ افکار کی جنگ جاری ہے۔۔۔ کردار کی جنگ جاری ہے۔۔۔ گفتار کی جنگ جاری ہے۔۔۔

  • تیشہ فرہاد لکھنے کا سفر

    تیشہ فرہاد مشہور ہے محبت کے لیے کوہ کنی یا ناممکن کو ممکن بنانے کے لیے اور ساتھ ہی اپنی نابودی کے لیے، ایسے ہی لکھنے کی ابتدا مشہور ہے ابتدا میں غم جاناں اور پھرِ دوراں کے لیے۔ لکھنے کا سفر شروع ہوتا ہے احساسِ جنون سے، اندر کی توانا آواز سے کہ یہ کارِ تخلیق عبث نہیں۔